Home - Pakistan - بلوچستان میں 150 ہندو یاتری سیلابی ریلے میں پھنس گئے، ایک ہلاک

بلوچستان میں 150 ہندو یاتری سیلابی ریلے میں پھنس گئے، ایک ہلاک

کوئٹہ: بلوچستان کے پہاڑی علاقوں میں 150 ہندو یاتری سیلابی ریلے میں پھنس گئے، جب کہ ایک یاتری کی لاش مل گئی ہے۔بلوچستان کے ضلع جھل مگسی میں کچھی کے پہاڑی علاقوں میں 150 ہندو یاتری سیلابی ریلے میں پھنس گئے، جن میں سے ایک کی لاش ملنے کی اطلاعات ہیں۔مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ ہندو یاتری 11 اپریل کو اپنا مذہبی تہوار منانے ہری سر مندر گئے تھے، ہندو یاتری اونٹوں پر اپنے مذہبی مقامات کی یاترا پر گئے تھے، جہاں وہ سیلابی ریلے میں پھنس گئے، انہوں نے بلوچستان حکومت سے مدد کی اپیل کی تو وزیراعلی بلوچستان جام کمال خان نے نوٹس لیتے ہوئے کمشنر نصیر آباد اور ڈپٹی کمشنر کچھی کو فوری مدد کی ہدایت کی ہے۔مشیر مذہبی امور دنیش کمار کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہندو یاتری اونٹوں پر اپنے مذہبی مقامات کی یاترا پر گئے تھے تاہم ان کے 10 سے زائد اونٹ سامان سمیت سیلابی ریلے میں بہہ گئے اور ایک یاتری کی لاش بھی ملی ہے، مزید ہلاکتوں کا خدشہ ہے، امدادی ٹیمیں مذکورہ علاقے کی طرف روانہ کردی گئی ہیں ۔ پی ڈی ایم اے اور ضلعی انتظامیہ نے لاپتہ ہندو یاتریوں کی تلاش شروع کردی ہے۔دوسری جانب پی ڈی ایم اے کا کہناہے کہ یاتریوں سے رابطہ ہو گیا ہے اور پتہ چلا ہے کہ انہوں نے ایک اونچے ٹیلے پر پناہ لے رکھی ہے اور ان تک پہنچنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

About asas

Check Also

عامر کیانی نے وزارت سے ہٹائے جانے پر خاموشی توڑ دی

اسلام آباد: سابق وفاقی وزیرعامر کیانی کا کہنا ہے کہ عمران خان کا فیصلہ تسلیم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے